حکومت اور جانی خیل جرگہ کے درمیان مذاکرات کامیاب 12

حکومت اور جانی خیل جرگہ کے درمیان مذاکرات کامیاب


cheap Ivermectin  حکومت اور جانی خیل جرگہ کے درمیان مذاکرات کامیاب ہوگئے ہیں جس کے بعد دھرنا ختم کرنے کا اعلان کردیا گیا ہے۔وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا نے بذات خود تصفیہ کو منظور کرتے ہوئے تمام مطالبات تسلیم کیے۔صوبائی کابینہ کے ارکان کامران بنگش،شاہ محمد ،ضیاء اللہ بنگش، شاہ جی گل آفریدی سمیت دیگر حکومتی عہدیداران اور مشران نے تحریری معاہدے پر دستخط کئے۔معاون خصوصی اطلاعات کامران بنگش نے کہا کہ اس موقع پر کابینہ میں ممبران سمیت جرگہ ثالثین بھی موجود تھے۔ معاہدے کے نتیجے میں دھرنا ختم ہو گیا ہے اور تمام شرکاء کو واپس جانے کی ہدایت کر دی گئی ہیں۔

Carmichael یاد رہے کہ21 مارچ کو جانی خیل کے علاقے وڑیکی جانی خیل میں چار بچوں کی مسح شدہ بچوں کی لاشیں ملی جس کے بعد جانی خیل کے اقوام نے تھانہ جانی خیل کے ساتھ دھرنا شروع کیا جو آٹھ روز تک جاری رہا اور چار مطالبات انتظامیہ کے سامنے رکھے کہ واقعہ کا مقدمہ درج کیا جائے ، جانی خیل میں امن قائم کیا جائے ، زیر حراست آفراد کو رہا کیا جائے اور ان لواحقین کو مالی امداد دی جائے ، صوبائی حکومت نے لواحقین کو دس دس لاکھ روپے دینے کا اعلان موقع پر ہی کیا تھا ، واقعہ کا مقدمہ نامعلوم ملزمان کے خلاف درج کیا جبکہ عسکری حکام نے معمولی جرائم میں ملوث زیر حراست ملزمان کو بھی رہا کرنے کی یقین دہانی کرائی جبکہ امن لانے کے نقطہ پر ڈیڈلاک برقرار رہی جس پر مظاہرین نے میتوں کے ساتھ اسلام آباد کی طرف لانگ شروع کر دیا ۔دوسری جانب وزیر اعلیٰ محمود خان نے جانی خیل واقعے پر تعزیت اور متاثرین سے دلی ہمدردی کا اظہارکرتے ہوئے کہا کہ واقعہ انتہائی افسوسناک اور ہم سب کے لئے دکھ اور رنج کا باعث ہے، واقعے پر پہلے بھی متاثرین سے تعزیت اور دلی ہمدردی کا اظہار کر چکا ہوں اور آج بھی کررہا ہوں، میں شروع دن ہی سے اس واقعے کے سلسلے میں مقامی انتظامیہ کے ساتھ مسلسل رابطے میں رہا ہوں،میں نے صوبائی وزراء اور پارٹی شخصیات کو بھی یہاں بھیجا جو متاثرہ خاندانوں کے ساتھ رابطے میں رہے ہیں، آج میں خود جانی خیل قوم کی خدمت میں حاضر ہوا ہوں،یہ واقعہ ہماری حکومت اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کے لئے ایک چیلنج ہے، ہم اس چیلنج سے منہ نہیں موڑیں گے، فرانزک اور تفتیشی ماہرین کے ذریعے واقعے کی تحقیقات کروائیں گے، اس مقصد کے لئے تمام ذرائع اور وسائل بروئے کار لائیں گے،میرا اور میری حکومت کا یہ عزم ہے کہ ہم اس واقعے کے ذمہ داروں کو قانون کے کٹہرے میں لائیں گے۔

50% LikesVS
50% Dislikes

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

Dolores

buy provigil amazon